منی لانڈرنگ کی روک تھام کیلئے ٹاسک فورس قائم

اسلام آباد: وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا ہے کہ اسحاق ڈار نے بیرون ملک موجود پاکستانیوں کے 2 سو ارب ڈالر ملک واپس لانے کے لیے کوئی اقدامات نہیں کیے۔ بیرون ممالک میں پاکستانیوں کی کتنی جائیداد کے بارے مکمل معلومات نہیں جبکہ صرف دبئی میں 8 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری پاکستانیوں کی ہے۔
اسد عمر کا پہلا دن اور بڑے فیصلے، سمندر پار پاکستانیوں کے لیے بانڈز، منی لانڈرنگ روکنے کے لیے ٹاسک فورس قائم کر دی۔ چارج سنبھالنے کے بعد وزارت خزانہ کے دورے کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اسد عمر کا کہنا تھا کہ کابینہ سے منظوری کے بعد اوورسیز پاکستانیوں کے لیے بانڈز اور سکوک جاری کیے جائیں گے۔
وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ منی لانڈرنگ کی روک تھام کے لیے تشکیل دی گئی ٹاسک فورس 2 ہفتوں میں اپنی رپورٹ پیش کرے گی۔ بیرون ممالک میں پاکستانیوں کی کتنی جائیداد کے بارے مکمل معلومات نہیں جبکہ صرف دبئی میں 8 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری پاکستانیوں کی ہے۔
وزیر خزانہ نے واضح کیا کہ پی آئی اے، اسٹیل ملز میں سے کسی کو نہیں نکالا جائے گا، وزیراعظم ہاؤس کا عملہ بھی بیروزگار نہیں ہوگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں