18

بابِ پاکستان کے آرکیٹیکٹ کی لاہور میں پراسرار ہلاکت، بیٹا گرفتار

لاہور: باب پاکستان کے آرکیٹیکٹ امجد مختار لاہور میں پراسرار طور پر ہلاک ہو گئے، پولیس نے شک کی بنیاد پر بیٹے عمر کو حراست میں لے لیا۔

بابِ پاکستان کے آرکیٹکٹ امجد مختار کی لاہور میں پراسرار ہلاکت کی تحقیقات میں پیشرفت، پولیس نے امجد مختار کے بیٹے عمر امجد کو حراست میں لے لیا۔

باب پاکستان کے آرکیٹکٹ امجد مختار 2 روز قبل واپڈا ٹاؤن میں واقع اپنے گھر میں مردہ حالت میں پائے گئے تھے۔ پولیس ذرائع کے مطابق امجد مختار نے بیٹے عمر امجد کے ساتھ ناشتہ کیا، عمر نے والد کو ناشتے کے بعد ادویات دیں اور گھر سے چلا گیا۔

متوفی امجد مختار دوپہر کو سونے چلے گئے اور ملازمہ کو 5 بجے جگانے کو کہا، ملازمہ جگانے گئی تو امجد مختار کو مردہ حالت میں پایا۔ پولیس نے واقعے کی تحقیقات کرتے ہوئے شک کی بنیاد پر امجد مختار کے بیٹے عمر امجد کو حراست میں لے لیا۔ پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ مزید حقائق پوسٹ مارٹم کے بعد سامنے آئیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں