15

جنوبی پنجاب صوبے کا قیام آسان نہیں،عارف علوی

صدرمملکت ڈاکٹرعارف علوی نے پشاور کے گورنر ہاوس میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ صوبوں میں تعلقات پیدا کرنا وفاق کی زمہداری ہے،فاٹا کا انضمام قانونی اعتبار سے ہوگیا ہےلیکن مسائل پرمسلسل توجہ دینا ہوگی۔

صدرمملکت ڈاکٹرعارف علوی کا مزید کہنا تھا کہ کے پی اور پاکستان کا قانون سابق فاٹا میں پہنچانا فوری کام ہے،فاٹانےدہشتگردی کیخلاف جنگ میں بہت نقصان اٹھایا،ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں امن آنے سے سیاحت میں اضافہ ہوا،امن معیشت کو مضبوط بناتا ہے۔اب سیاحوں کی تعدادپندرہ لاکھ سے 22لاکھ تک پہنچ گئی ہے، بغیر پلاننگ تعمیرات کی اجازت دی تو سیاحتی مقامات کی خوبصورتی ختم ہوجائےگی۔

صدرمملکت ڈاکٹرعارف علوی نے پریس کانفرنس میں مزید کہا کہ فاٹا سےلیویز اور خاصہ دار کو نکالا نہیں جائے گا بلکہ مزید 30ہزار افراد کو روزگار دیاجائےگا،فاٹا کے حوالے سے دس سال میں ایک ہزارارب روپے خرچ ہوں گےجب کہ این ایف سی میں فاٹا کے حوالے سے کے پی کی تین فیصد گرانٹ بڑھائےجانے کی تجویز زیر غور ہے ان کا مزید کہنا تھا کہ ہمیں مسائل کاسامناہےلیکن سب مشکلات حل ہوجائیں گی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں