کراچی: میڈیکل کی طالبہ سٹریٹ کرمنلز کی فائرنگ کا نشانہ بن گئی

 کراچی میں ڈاکووں نے ہنستا بستا گھر اجاڑ دیا، تعلیم کے حصول کیلئے نکلنے والی میڈیکل کی طالبہ سٹریٹ کرمنلز کی فائرنگ کا نشانہ بن گئی۔

کراچی کی سڑکوں پر دندناتے سٹریٹ کرمنلز نے شہریوں کو یرغمال بنا رکھا ہے۔ معصوم شہریوں کی جان جا رہی ہے لیکن نہ پولیس کچھ کر رہی ہے نہ رینجرز سے حالات قابو میں آ رہے ہیں۔ گلشن اقبال موچی موڑ پر میڈیکل کی طالبہ اور گولڈ میڈلسٹ مصباح ڈاکووں کے ہاتھوں موت کے گھاٹ اتار دی گئی۔

24 سالہ مصباح صبح سویرے والد کے ساتھ سٹاپ پر یونیورسٹی بس کے انتظار میں تھی، دونوں کار میں بیٹھے تھے کہ ملزمان نے والد سے موبائل فون چھینا اور پھر گولیاں چلا کر مستبقل کی ڈاکٹر کو ہمیشہ کی نیند سلا دیا۔ میت کی صورت میں گھر پہنچی تو اہل خانہ پر غم کا پہاڑ ٹوٹ پڑا، مصباح کے دوست بھی آخری دیدار کیلئے پہنچے، مصباح کی نماز جنازہ مقامی مسجد میں ادا کر دی گئی۔
 

اپنا تبصرہ بھیجیں